تازہ ترین
آج سے پنجاب ، کے پی کے اور کشمیر سمیت اکثر مقامات پرگرج چمک کیساتھ بارشوں کا نیا سلسلہ شروع ہو نے کا امکان ہے: محکمہ موسمیات         امریکہ نے مودی ،ٹرمپ ملاقات سے چند گھنٹے قبل معروف کشمیری رہنما اور حزب المجاہدین کے سربراہ سید صلاح الدین کو عالمی دہشت گرد قرار دے دیا         وہ وقت جب انگریزوں نے بھارتیوں کو سانپ پکڑنے پر انعام دینے کا اعلان کیا         معدے کی تیزابیت اور سینے کی جلن کم کرنے والے کھانے         ورلڈ ہاکی لیگ میں شرکت کے بعد قومی ٹیم وطن واپس پہنچ گئی         پاناما جے آئی ٹی نے طارق شفیع کو پھر طلب کرلیا         بلآخر جے آئی ٹی نے مریم نواز کو بھی طلب کر لیا ، 5جولائی کو اہم دستاویز ساتھ لانے کی ہدایت ، حسین اور حسن نواز کو بھی دوبارہ پیش ہونے کی ہدایت         گنجے اور گرتے بالوں والوں کیلئے بڑی خوشخبری ،پیاز کے ذریعے بال پھر سے گھنے بنانے کا آزمودہ طریقہ         لیموں کے ذریعے مچھروں کو دور رکھنے کا آسان طریقہ اور حیران کن طریقہ         سفید بال کالے کرنے کا قدرتی طریقہ        

وزیر داخلہ بلوچستان سرفراز بگٹی ’رنگے ہاتھوں‘پکڑے گئے

تلور ایک انتہائی نایاب پرندہ ہے جو کہ پاکستان کے کچھ مخصوص علاقوں میں بھی پایا جاتاہے جس کے شکار کیلئے عرب شہزادے بھی پاکستان آ تے رہتے ہیں اور اس حوالے سے حکومت کو بھی کافی تنقید کا سامنا کرناپڑتاہے تاکہ اس نایاب مہمان پرندے کی نسل کو بچایا جا سکے جبکہ اس کے شکار پر پابندی بھی عائد کی گئی اور اگر کوئی ایسا کرتاہوا پکڑا جائے تو اس کیخلاف کارروائی بھی عمل میں لائی جاتی ہے ۔
تفصیلا ت کے مطابق اس سب کے باوجود بلوچستان کے وزیر داخلہ سرفراز بگٹی کی ایک فیس بک صارف نے ایک تصویر شیئر کی ہے جسے دیکھ کر شہریوں کی آنکھیں کھلی کی کھلی رہ گئیں ہیں ۔سرفراز بگٹی اپنی گاڑی کی چھت پر بیٹھے ہیں اور ان کے ہاتھ میں شکار کھیلنے والی بندوق ہے جبکہ گاڑی کے بونٹ پر ڈھیر سارے نایاب پرندے تلو ر ’مردہ‘ حالت میں پڑے ہیں جو کہ ممکنہ طور پر شکار کر کے پکڑے گئے ہیں ۔
فیس بک صارف محمد وقاص میمن نامی شخص کی جانب سے شیئر کی گئی جس پر شہریوں نے سخت الفاظ کا استعمال کرتے ہوئے تنقید کا نشانہ بنایا ،فیس بک صارف نے پوسٹ کے ساتھ پیغام درج کیا کہ ’میں صرف پوچھنا چاہتاہوں کہ بلوچستان کے وزیر آزادنہ طور پر اس نایاب پرندے کا شکار کرہے ہیں کیا یہ قانونی ہے یا غیر قانونی ‘۔
وقاص میمن کی اس پوسٹ پر عمران ظہیر نامی صارف نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ’مراعات یافتہ افراد کیلئے کوئی قانون نہیں قانون صرف عام عادمی کیلئے ہے‘۔اس کا کہناتھا کہ یہ تو سنا تھا کہ دوہری شہریت ہوتی ہے لیکن کسی ملک میں دوہرا قانون ہو یہ نہیں سنا تھا ،اور یہ صرف ہمارے ملک میں ہی ہوتاہے۔

کمنٹ کریں - Leave Comments

آپ کا ای میل خفیہ رکھا جائے گا۔ تمام فیلڈ فل کرنا ضروری ہیں۔ Your Email will never published. *

*