تازہ ترین
بورے والا:ڈی سی او وہاڑی کا چیئرمین بلدیہ کے ہمراہ رمضان بچت بازار کا دورہ۔         بورے والا: تیز رفتار ڈالہ کی موٹر سائیکل کو ٹکر،45سالہ نوجواں شدید زخمی۔         بورے والا: خون سفید ہو گیا پہلے بیٹے کے ہاتھوں ماں قتل اب بھائی کے ہاتھوں بھائی قتل۔         ”پاکستان کیساتھ کوئی میچ بھی نہیں، پھر بھی پسینے چھوٹ رہے ہیں۔۔۔“ بنگلہ دیشی کپتان کی چھٹی حس ”پھڑکنے“ لگی، پاکستانی ٹیم کے بارے میں ایسی بات کہہ دی جس کا چرچا پوری دنیا میں ہے، جان کر آپ ٹورنامنٹ کیلئے مزید پرجوش ہو جائیں گے         ڈرائیور کی بیٹی پاکستان کی وہ اداکارہ جو پیدائش کے وقت اتنی خوبصورت تھی کہ پیدا ہوتے ہی مالکان نے اسے گود لے لیا اور پھر بڑی ہو کر وہ کرکٹر سرفراز نواز کی دلہن بنی         امریکی صدر ٹرمپ کی جانب سے مسلمانوں کو رمضان المبارک کی مبارکباد کا پیغام         رحیم یار خان : جائیداد کے تنازع پر چچا زاد بھائیوں نے کزن کی ناک اور ٹانگ کاٹ دی         نشے کی حالت میں ڈرائیونگ : عدالت نے نیوزی لینڈ کے فاسٹ بالرکو سزا سنا دی         صدر ممنون حسین کی ماہانہ تنخواہ 10 لاکھ سے بڑھ کر16 لاکھ روپے ہوگئی         عمران خان اے این پی کی وکٹ لے اڑے،عامر ایوب پی ٹی آئی میں شامل        
18555228_1176383815806503_1163151016_n

بورے والا: تحصیل میونسپل کمیٹی کے منتخب چیئرمین نے آتے ہی شہریوں کو ملنے والی حکومتی مراعات سے محروم کر دیا ،کالج روڈپر لگنے والے وسیع رمضان بازارکو چھوٹی سی گلی تک محدود کر دیا

بورے والا(جمیل فرہاد بھٹی ) تحصیل میونسپل کمیٹی کے منتخب چیئرمین نے آتے ہی شہریوں کو ملنے والی حکومتی مراعات سے محروم کر دیا ،کالج روڈپر لگنے والے وسیع رمضان بازارکو چھوٹی سی گلی تک محدود کر دیا ،وسیع رمضان بازار سے شہریوں کو کچھ نہ کچھ ریلیف مل جاتا تھا مگر چیئرمین بلدیہ نے غریب شہریوں کی وہ سہولت بھی ختم کرنے کی کوشش کی ہے جس پر تحصیل بھر کے شہریوں مین تشویش پائی جا رہی ہے رمضان بازار کو ایک چھوٹی سی گلی میں تبدیل کرنے کا مقصد صرف اتنا ہے کہ چئیرمین اور دوروں پر آنے والے وزراء کی بڑی بڑی گاڑیاں آسانی سے کالج روڈ سے گزر کر بلدیہ میں داخل ہو سکیں رمضان بازار کے حوالہ سے بلدیہ بورے والا کی تیاری صفر اور فوٹو سیشن تک محدود ہے۔ شہر کے باسیوں پر جو آٹا میں نمک کے برابر حکومتی ریلیف تھا وہ بھی ختم کر دیا گیا ہے لوگوں کا کہنا ہے کہ منتخب نمائندوں سے ایڈمنسٹریٹر دور بہتر تھا جس میں وسیع رمضان بازار لگا کر انتظامیہ کچھ نہ کچھ فائدہ عام شہری تک پہنچا رہی تھی مگر منتخب چئیر مین بلدیہ چند مخصوص لوگوں کو نوازنے اور خوش کرنے کے علاوہ کچھ نہیں کر رہے جس کا خمیازہ بورے والا کی عوام کو بھگتنا پڑے گا بلدیہ ٹیم نے اپنی نا اہلی چھپانے کے لئے وسیع رمضان بازار کو ایک چھوتی سی گلی تک محدود کر دیا ہے جس کے ساتھ عوامی بیت الخلا ء بنے ہوئے ہیں عوام کھانے پینے کی اشیا ء خوردو نوش وہاں سے خریدنے پر مجبور ہوں گے شہریوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب ،کمشنر ملتان، ڈپٹی کمشنر وہاڑی سے مطالبہ کیا ہے کہ رمضان بازار کو اس کی پرانی جگہ پر بحال کیا جائے تاکہ شہری ا س کی افادیت سے بھر پور فائدہ اٹھا سکیں

کمنٹ کریں - Leave Comments

آپ کا ای میل خفیہ رکھا جائے گا۔ تمام فیلڈ فل کرنا ضروری ہیں۔ Your Email will never published. *

*