تازہ ترین
بورے والا:ڈی سی او وہاڑی کا چیئرمین بلدیہ کے ہمراہ رمضان بچت بازار کا دورہ۔         بورے والا: تیز رفتار ڈالہ کی موٹر سائیکل کو ٹکر،45سالہ نوجواں شدید زخمی۔         بورے والا: خون سفید ہو گیا پہلے بیٹے کے ہاتھوں ماں قتل اب بھائی کے ہاتھوں بھائی قتل۔         ”پاکستان کیساتھ کوئی میچ بھی نہیں، پھر بھی پسینے چھوٹ رہے ہیں۔۔۔“ بنگلہ دیشی کپتان کی چھٹی حس ”پھڑکنے“ لگی، پاکستانی ٹیم کے بارے میں ایسی بات کہہ دی جس کا چرچا پوری دنیا میں ہے، جان کر آپ ٹورنامنٹ کیلئے مزید پرجوش ہو جائیں گے         ڈرائیور کی بیٹی پاکستان کی وہ اداکارہ جو پیدائش کے وقت اتنی خوبصورت تھی کہ پیدا ہوتے ہی مالکان نے اسے گود لے لیا اور پھر بڑی ہو کر وہ کرکٹر سرفراز نواز کی دلہن بنی         امریکی صدر ٹرمپ کی جانب سے مسلمانوں کو رمضان المبارک کی مبارکباد کا پیغام         رحیم یار خان : جائیداد کے تنازع پر چچا زاد بھائیوں نے کزن کی ناک اور ٹانگ کاٹ دی         نشے کی حالت میں ڈرائیونگ : عدالت نے نیوزی لینڈ کے فاسٹ بالرکو سزا سنا دی         صدر ممنون حسین کی ماہانہ تنخواہ 10 لاکھ سے بڑھ کر16 لاکھ روپے ہوگئی         عمران خان اے این پی کی وکٹ لے اڑے،عامر ایوب پی ٹی آئی میں شامل        
news-1495178854-3888_large

عالمی ہیکرز نے تاوان کیلئے پاکستان کا رخ کرلیا،سٹیٹ لائف کے کمپیوٹر پر پہلا حملہ

عالمی ہیکرز نے تاوان کے لئے پاکستان کا رخ کرلیا ہے اور سٹیٹ لائف کے کمپیوٹر پر پہلا حملہ کردیا ہے جس کے لئے سائبرکرائم سکیورٹی ماہرین کی جانب سے الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔

نجی ٹی وی چینل اے آروائی نیوز کے مطابق پاکستان کے کئی اداروں پر عالمی ہیکرز کی جانب سے سائبر اٹیک کی اطلاعات ہیں جس کے بعد سائبر کرائم سکیورٹی ماہرین نے حکومت سے اس معاملے پر فوری نوٹس لینے کی اپیل کی ہے اور الرٹ جاری کیا ہے کہ کوئی بھی ملازم آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ کے مشورے کے بغیر کمپیوٹر آن نہ کرے جبکہحکومت سے سائبر انسڈنٹ رسپانس کمیٹی تشکیل دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق پاکستان کے 3 معروف ہسپتالوں ،سیمنٹ اور ریفائنری کمپنی کے کمپوٹر سسٹمز پر حملہ کیا گیا ہے۔یاد رہے کہ گزشتہ دنوں ہیکر ز نے پوری دنیا کے ڈیڑھ سو ملکوں کے کمپیوٹرز پر حملہ کرکے ڈیٹا ہیک کرلیا تھا اور تاوان کا مطالبہ کیا تھا۔

کمنٹ کریں - Leave Comments

آپ کا ای میل خفیہ رکھا جائے گا۔ تمام فیلڈ فل کرنا ضروری ہیں۔ Your Email will never published. *

*